Sun 29-8-1442AH 11-4-2021AD

طیارہ حادثہ:97 افراد کی شہادت کی تصدیق،محکمہ صحت

 حادثے میں زندہ بچ گئے ہیں جو اسپتال میں زیرِ علاج ہیں۔وزيراعظم عمران خان کی ہدايت پرلواحقين کو فی کس 10 لاکھ روپے ديئے جائيں گے، تدفین کے اخراجات پی آئی اے کے ڈسٹرکٹ مینیجرز لواحقین کے گھر جا کر ادا کریں گے۔

محکمہ صحت سندھ نے بتایا ہے کہ کراچی کے جناح اسپتال میں66 لاشیں لائی گئی ہیں،31 لاشیں سول اسپتال کراچی میں ہیں۔اب تک 19 لاشوں کی شناخت کی تصدیق ہوئی ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل افتخار بابر نے ہفتے کی صبح ٹویٹ کرتے ہوئے بتایا ہے کہ جائےحادثہ پرآرمی،رینجرزاوردیگراداروں کاریسکیوآپریشن جاری ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے بتایا کہ جائے حادثہ سے 97 لاشیں اٹھالی گئی ہیں اور 2 افراد زندہ بچنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق 25متاثرہ گھروں کو کلیئر کردیا گیا ہے،متاثرہ مکینوں کوسول انتظامیہ کی مدد سے مختلف جگہوں پرٹہرا گیا ہے۔

چيئرمين پی آئی اے کے مطابق 6 لاشيں ورثا کے حوالے کردی گئی ہيں،70 فيمليز سے رابطے ميں ہيں۔

عملے کے افراد کی شناخت کے لیے ان کی اہل خانہ یہاں آ کر سیپمل دے سکتے ہیں تاکہ متعلقہ میتوں کی شناخت کی جاسکے۔

وزيراعظم کینیڈاجسٹن ٹروڈو نے پی آئی اے کےطیارہ حادثہ پر اظہارِافسوس کیا ہے۔ کينيڈين وزيراعظم نےحادثے ميں شہيدافراد کےاہل خانہ سےتعزيت کا اظہار کیا ہے۔

افغانستان قومی مفاہمتی کونسل کے سربراہ عبداللہ عبداللہ  نے بھی حادثہ پراظہارافسوس کیا ہے اورکہا ہے کہ افغانستان غم کی اس گھڑی ميں پاکستانی عوام اورحکومت کے ساتھ ہے،حادثے ميں جاں بحق افراد کے لواحقين سے تعزيت کرتےہیں۔

طیارہ حادثہ: جائے وقوع کے فضائی مناظر

بھارتی وزیراعظم نریندر مودی سمیت سیاست دان راہول گاندھی نے بھی طیارہ حادثے پر اظہار افسوس کیا ہے۔وزیراعظم عمران خان نےعالمی رہنماؤں کی جانب سے پاکستان میں طیارہ حادثے پر تعزیتی پیغامات اور یکجہتی کے اظہار پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ غم کی گھڑی میں پاکستانی عوام اس تعاون اور یکجہتی کی قدر کرتے ہیں۔

طیارہ کریش: پنجاب بینک کے صدر کو ریسکیو کرلیا گیا

اس کےعلاوہ حکومت نے طيارہ حادثے کی تحقيقات کيلئے 4 رکنی کميٹی بھی تشکيل دے دی ہے۔ پی آئی اے طيارہ حادثہ کی تحقيقاتی ٹيم کی سمری منظور کرلی گئی ہے۔ تحقیقاتی ٹیم کی سربراہی ایئرکموڈورعثمان غنی کریں گے جو ایئرکرافٹ ایکسیڈنٹ اینڈ انویسٹی گیشن بورڈ کے سربراہ ہیں۔

دیگر 3 ارکان میں ایئرکرافٹ ایکسیڈنٹ اینڈ انویسٹی گیشن بورڈ کے ایڈیشنل ڈائریکٹر ٹیکنیکل انویسٹی گیشن، پاکستان ایئرفورس سیفٹی بورڈ کے گروپ کیپٹن توقیر اور ناصر مجید شامل ہیں۔ وزیراعظم نے ٹيم کو ہدايت کی ہے کہ ابتدائی رپورٹ فوری اور تفصيلی رپورٹ ايک ماہ ميں مکمل کرے

Read Previous

امریکا نے عالمی ادارہ صحت کے ساتھ تعلقات ختم کردیے

Read Next

مشیر صحت ڈاکٹر ظفر مرزا کے مالی اختیارات ختم