Mon 13-2-1443AH 20-9-2021AD

ویسٹ انڈیز کی ٹیم انگلینڈ پہنچ گئی

بین الاقوامی کرکٹ کی بحالی کے لیے بے تابی سے منتظر منتظمین اور شائقین کے لیے بڑی اور خوشگوار خبر انگلینڈ سے آئی ہے جہاں ویسٹ انڈیز کی ٹیم ٹیسٹ سیریز کھیلنے پہنچی ہے۔

وہ کرکٹ شائقین جو گزشتہ تین ماہ سے پرانے میچوں کی ٹی وی اور سوشل میڈیا پر دکھائی جانے والی جھلکیوں سے بوریت کا شکار تھے اب ان کو براہ راست کرکٹ دیکھنے کو ملے گی۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق انگلش کرکٹ ٹیم کے کپتان جوئے روٹ نے ویسٹ انڈیز کی ٹیم کے دورے کے فیصلے کے بارے میں کہا کہ ’یہ بہت ہی زیادہ حیران کن ہوگا اور میرے خیال میں پوری دنیائے کرکٹ شکر گزار ہوگی کہ کچھ کھیل دیکھنے کو ملے گا-

اے ایف پی کے مطابق اب کی بار سیریز کے میچز اوول، ایجبسٹن اور لارڈز کے گراؤنڈز میں ہزاروں شائقین کے سامنے نہیں ہوں گے بلکہ اولڈ ٹریفورڈ اور اگیاس بول میں سٹیڈیم کے بند دروازوں کے پیچھے کھیلے جائیں گے جہاں کھلاڑیوں کے لیے وائرس سے بچاؤ کا ماحول ہوگا۔

ٹیسٹ کرکٹ میں دن کا کھیل ختم ہونے پر کھلاڑی شام کو باہر وقت گزارتے تھے مگر رواں سیریز میں سٹیڈیم کے اندر ہی بنائے گئے ہوٹلوں میں ٹھہرنا ہوگا اور اس کے لیے بھی عالمی وبا سے حفاظتی ماحول تیار کیا گیا ہے۔

ہمپشائر کے اگیاس بول سٹیٹڈیم میں سیریز کا ابتدائی میچ آٹھ جولائی کو ہوگا جبکہ اگلے دونوں ٹیسٹ اولڈ ٹریفورڈ کے گراؤنڈ پر کھیلے جائیں گے۔

اے ایف پی کے مطابق گیند کو سوئنگ کرنے کے لیے اس پر تھوک کے استعمال پر پابندی کا فیصلہ بدھ کو بین الاقوامی کرکٹ کونسل کے اجلاس میں کیا جائے گا جبکہ کھلاڑیوں کے کورونا ٹیسٹ بار بار کیے جائیں گے۔

انگلش کرکٹ ٹیم کے کپتان جوئے روٹ کے مطابق یہ دنیائے کرکٹ کے لیے ایک خوشگوار واقعہ ہے۔ فوٹو: روئٹرز

انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ کے ایونٹس ڈائریکٹر سٹیو ایلورتھی نے کہا ہے کہ ’ہمارا بنیادی مقصد تمام شراکت داروں کو مکمل محفوظ ماحول فراہم کرنا ہے۔‘

اے ایف پی کے مطابق اگر گرمیوں کے سیزن میں کرکٹ نہیں ہوتی تو انگلش کرکٹ بورڈ کو 316 ملین ڈالر کا نقصان ہوگا۔

اے ایف پی کے مطابق دنیائے کرکٹ کی غریب ترین ٹیموں میں سے ایک ویسٹ انڈیز اب دنیا کی امیر ترین ٹیموں میں سے ایک انگلینڈ کی مدد کر رہی ہے۔ اور انگلینڈ کے سابق کپتان ڈیوڈ گاور نے کہا ہے کہ ویسٹ انڈیز کی ٹیم نے ’ہمیں فیور دی ہے‘ ایسے وقت میں جب برطانیہ میں کورونا وائرس سے اموات 40 ہزار ہو چکی ہیں۔

Read Previous

تین سری لنکن کھلاڑیوں کو تحقیقات کا سامنا

Read Next

پنجاب میں دکانوں اور کاروبار کے اوقات تبدیل کردیئے گئے